ارشد جمال نے اتر پردیش حکومت اورمؤ نگر پالیکا پریشد کوہائی کورٹ کے فیصلے کی نقل فراہم کرائی-Arshad Jamal



ارشد جمال نے اتر پردیش حکومت اورمؤ نگر پالیکا پریشد کوہائی کورٹ کے فیصلے کی نقل فراہم کرائی


مؤناتھ بھجن۔ مؤ نگر پالیکا پریشد کے سابق چیئرمین ارشد جمال نے اتر پردیش حکومت،لکھنؤ کو خط لکھ کر مطلع کرتے ہوئے الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بینچ میں ان کی جانب سے داخل جن ہت یاچکا نمبر9740/2017(ارشد جمال و دیگر بنام اتر پردیش حکومت) اور رٹ پٹیشن نمبر 8293/2017(محمد مصطفی اور دیگر بنام بھارت سرکار) اور دیگر درخواستوں پر تاریخ 12-05-2017 کو دیئے گئے فیصلے کے مطابق اتر پردیش حکومت کے غذائی تحفظ کے سیکشن اور شہری اداروں کو مذبح خانوں کی جدید کاری کرنے اور گوشت کی دکانوں کو لائسنس دیئے جانے اور ان کی توسیع کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ خط میں مسٹر جمال نے چیف سکریٹری نگر وکاس، اتر پردیش حکومت، لکھنؤ سے کورٹ کے ذریعہ لئے گئے فیصلے کے مطابق سارہو سلاٹر ہاؤس مؤ نگر پالیکا پریشد، مؤناتھ بھجن کو جلد سے جلد چالو کئے جانے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔ اس ضمن میں مسٹر جمال نے 83 صفحات پر مبنی معزز ہائی کورٹ کے حکم کی کاپی ضلع مجسٹریٹ، چیئر مین نگر پالیکا پریشد اور ایگزیکٹیو آفیسر،نگر پالیکا پریشد کو بھی دستیاب کرائی ہے۔ اسی کے ساتھ معززعدالت کے حکم کی تعمیل میں ضروری کارروائی کرنے کی درخواست بھی کی ہے۔ مسٹر جمال نے بتایا کہ جلد ہی رمضان شروع ہونے والا ہے اس لیے حکومت کو فورا ًکوئی نہ کوئی حل تلاش کرنا چاہیئے۔ فیصلے کے لئے مسٹر جمال آج سپریم کورٹ میں اپنا کیویٹئٹ داخل کرنے دہلی جائیں گے۔